چھے سالہ ارمش کے قتل کا ڈراپ سین، ماں ہی قاتل نکلی

چھے سالہ ارمش کے قتل کا ڈراپ سین، ماں ہی قاتل نکلی

حیدر آباد: حیدرآباد میں کم سن بچی کے قتل کا ڈراپ سین ، پولیس کے مطابق کم سن ارمش کی ماں ہی اس کی قاتل نکلی. تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز 6 سالہ معصوم ہنستی کھیلتی ارمش کا قتل ہوا، سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا گیا کہ کوئی نقاب پوش بچی کی لاش شاپنگ بیگ میں ڈال کر سنسان گلی میں رکھ رہا ہے، اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد نہ صرف ارمش کے والدین بلکہ پورا پاکستان اس سوچ میں تھا کہ آخر معصوم ارمش کو کس نے مارا؟ کس نے یہ ظلم کیا؟ بچی کو کون لیکر گیا؟ کہاں قتل کیا گیا؟ کس نے بیگ میں لاش ڈال کر سنسان گلی میں پھینکی، یہ وہ سوالات تھے جن کا جواب سب جاننے چارہے تھے۔ پولیس نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ان سب سوالوں کا جواب آج ڈھونڈ لیا اور مجرمہ کو ڈھونڈ لیا۔ مجرمہ کوئی اور نہیں بلکہ ارمش کی ماں ہی نکلی، ارمش کے والد کو جب پتہ چلا تو زاروقطار رونے لگا۔ ایس ایس پی عدیل چانڈیو کے مطابق قتل کا معمہ سی سی ٹی وی وڈیو سے حل ہوا، پہلی وڈیو میں برقعہ پوش خاتون لاش گلی میں پھینک کر چلی گئی جبکہ دوسری وڈیو میں برقعے کے بغیر ایک خاتون آئی جس پر پولیس کو شک ہوا۔ پولیس نے بچی کی ماں سے تفتیش کی تو اس نے اعتراف جرم کر لیا۔ ارمش کی والدہ شگفتہ ناز نے پولیس کو بتایا کہ وہ گھریلو جھگڑے سے تنگ تھی، اس لیے وہ بچی کو قتل کرکے خودکشی کرنا چاہتی تھی۔ پولیس کے مطابق شگفتہ ذہنی مریضہ لگتی ہے اور اس کے جسم پر بلیڈ کٹ کے نشان بھی ملے ہیں جو اس نے آج ہی اپنے آپکو مارے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here