ڈی ایچ کیو وہاڑی ایمرجنسی میں وسیم نامی گارڈ کی بدمعاشیاں عروج پر ہارٹ اٹیک کے مریض کو وہیل چئیر دینے سے انکار

وہاڑی(چوہدری ساجد محمود بیورو چیف )ڈی ایچ کیو وہاڑی ایمرجنسی میں وسیم نامی گارڈ کی بدمعاشیاں عروج پر ہارٹ اٹیک کے مریض کو وہیل چئیر دینے سے انکار
تفصیلات کے مطابق آج صبح وہاڑی کے رہائشی کو ہارٹ اٹیک آیا اس کا بیٹا والد کو فوری طور پر ڈی ایچ کیو ہسپتال لے گیا۔ ایمرجنسی وارڈ کے باہر گارڈ جو کہ سول کپڑوں میں بیٹھا تھا نے مریض کو وہیل چئیر دینے سے انکار کردیا اور مریض کے بیٹے کو کہا کہ اپنا اوریجنل شناختی کارڈ لیکر آو اس کے بغیر وہیل چئیر نہیں ملے گی کیوں کہ یہ ایم ایس کا حکم ہے کہ کسی کو بھی شناختی کارڈ جمع کیے بغیر وہیل چئیر نہیں دینی ہے۔جس پر مریض کے بیٹے نے منت سماجت کی کہ مریض کو ہارٹ اٹیک آیا ہے اسکی حالت سیریس ہے پلیز مہربانی کرو لیکن وہ نہیں مانا اور کہنے لگا کہ شناختی کارڈ چمع کیے بغیر تو میں کسی صورت چئیر نہیں دوں گا چاہے کچھ بھی ھو جائے جاو جا کر ایم ایس سے لکھوا کر لاو تب وہیل چئیر ملے گی ورنہ نہیں جس پر وہیل چئیر اٹھانے پر بدتمیزی پر اتر آیا اور مرنے مارنے پر اترآیا اور کہنے لگا کہ میں سپر وائزر بابا نور اور ایم ایس کا خاص بندہ ھوں میرا کوئی کچھ نہیں بگاڑ سکتا ۔چارو ناچار لڑکے نے شہر میں دوست کو فون کیا وہ شناختی کارڈ لیکر پہونچا تو شناختی کارڈ جمع کرکے وہیل چئیر دی اور ساتھ یہ بھی کہا کہ مریض اتار کر ابھی فوری طور پر وہیل چئیر واپس دے کر جاو
مریض کے لواحقین نے گارڈ کے اور انتظامیہ کے اس رویہ پر احتجاج کرتے ھوئے کہا کہ کم از کم ایمرجنسی میں تو ایمرجنسی مریض آتے ہیں ایسے رویے سے مریض کا نقصان بھی ھو سکتا ہے۔
لواحقین نے انتظامیہ اور ڈپٹی کمشنر وہاڑی سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here