پولیس چوری برآمد کرنے کی بجائے ہمیں‌ہراساں کر رہی ہے

لڈن (نامہ نگار) ظہور الہی تشدد کیس,
مدعی مقدمہ سونا چوری میاں ایاز دولتانہ کی والدہ کے ہمراہ پریس کانفرنس
پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما میاں اشفاق حسین دولتانہ مرحوم اور مقامی زمیندار میاں ایاز دولتانہ کی والدہ شیرین بی بی کی پریس کانفرنس, انہوں نے کہا کہ ہمارے گھر رات کے وقت 161 تولہ سوناطلائی زیورات چوری ہوے جسکا مقدمہ تھانہ لڈن میں درج ہے پولیس نے کال ڈیٹا نکلوا کر صرف پوچھ گاچھ کی لیکن کہچھ عناصر نے واقعہ کو غلط رنگ دے کر مدعی کو ملزم اور ملزم کو مدعی بنا کر انصاف کی دھجیاں اڑائی گئی ہمارے باپردہ گھروں میں چھاپے مارے گئے توڑ پھوڑ کی گئی یہ کہا کا انصاف ہے ہمارا ڈیڑھ کروڑ مالیت کا سونے چوری چوری ہواہے کون ذمہ دار ہے شیرین بی بی نے کہا کہ میں وزیراعظم عمران خان کے پرانے ساتھی میاں اشفاق دولتانہ کی والدہ ہوں میرے گھر میں چوری کی واردات ہوئی ہے لیکن سرکار نے چور تو ناپکڑے بلکہ ہمیں تباہ وبرباد کر رکھ دیا ہے میرے پوتے جیل میں ہیں ہم پر بے بنیاد مقدمے درج کئے گئے ہمیں زلیل وخوار کیا جار ہا ہے میرا قصور یہ ہے کہ میں اشفاق حسین دولتانہ مرحوم کی ماں ہوں ایاز دولتانہ نے کہا کہ کہ پولیس افسران حقائق سامنے لائے اور سچائی بیان کریں اور کئی روز سے چلنے والے بے بنیاد پروپیگنڈے کو منطقی انجام تک پہنچائیں انہوں نے کہا کہ ہم وزیر اعظم عمران خان وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب سے اپیل کرتے ہیں کہ ہمارے ساتھ انصاف کیا جائے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here