پنجاب کے شہر بہالپور میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں نوجوان کی غلطی کی سزا اس کی والدہ کو دے دی گئی۔تفصیلات کے مطابق بہاولپور میں ملزم نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر اپنی بھانجی کے ساتھ ناجائزہ تعلقات کے شبے میں نوجوان کی ماں کو گن پوائنٹ پر اغوا کے بعد اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

پنجاب کے شہر بہالپور میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں نوجوان کی غلطی کی سزا اس کی والدہ کو دے دی گئی۔تفصیلات کے مطابق بہاولپور میں ملزم نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر اپنی بھانجی کے ساتھ ناجائزہ تعلقات کے شبے میں نوجوان کی ماں کو گن پوائنٹ پر اغوا کے بعد اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔
احمد پور شرقیہ کے تھانہ نوشہرہ جدید کی پولیس کے مطابق بستی واہی موچیاں کے اسماعیل کو شک تھا کہ بستی کے نوجوان ابوبکر کے اس کی بھانجی نادیہ سے ناجائز تعلقات ہیں۔ملزم نے اس بات کا بدلہ لینے کے لیے اپنے 3 ساتھیوں کے ساتھ مل کر ابو بکر کی والدہ نسیم بی بی کو گن پوائنٹ پر اس کے گھر سے اغوا کیا اور اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔
پولیس کے مطابق متاثرہ خاتون کی مدعیت میں ملزم اسماعیل اور اس کے ساتھیوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔
تاہم ابھی تک کوئی ملزم گرفتار نہ ہو سکا ہے۔جب کہ دوسری جانب پولیس نے مسافر خواتین کو لال سوہانرا کے جنگل میں لے جاکر مبینہ زیادتی کا نشانہ بنانے والے ملزمان کو گرفتار کرلیا۔پولیس حکام کے مطابق بہاولپور کے تھانہ عباس نگر کی حدود میں 3 اوباش نوجوانوں نے 2 خواتین کو لال سوہانرا کے جنگل میں لیجاکر مبینہ زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ پولیس نے تینوں ملزمان کوگرفتار کرلیا اور تھانہ عباس نگر میں تعزیرات پاکستان کی دفعہ 376 کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا پولیس کے مطابق نیشنل پارک لال سوہانرا میں تفریح کے لیے آنے والی نورین اور اریبہ کو عباس نگر کے رہائشی مبشر، اکبر اور کاشف ورغلا کر لال سوہانرا نیشنل پارک جنگل میں لے گئے اور وہاں ان دونوں کے ساتھ زیادتی کی، متاثرہ خواتین کے شورمچانے پر لوگوں نے تینوں ملزمان کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here