ٹیچنگ ہسپتال کے ڈاکٹرز کی بدمعاشی دیکھ کر سیکورٹی گارڈ بھی بد معاش بن گئے

ٹیچنگ ہسپتال کے ڈاکٹرز کی بدمعاشی دیکھ کر سیکورٹی گارڈ بھی بد معاش بن گئے،سفید ریش بزرگوں شہری کو بیوی اور بچوں کے سامنے غلیظ گالیاں دیتے رہے.خاتون کا شیر خوار بچہ گود میں اٹھائے سیکورٹی گارڈ کی منتیں ترلے، بے رحم سیکورٹی گارڈ نے بدتمیزی جاری رکھی. بے بس بزرگ شہری بیوی اور بچوں کے سامنے گالیاں سن کر مشتعل ہو گیا.سخت جملوں کے کسنے پر راہگیروں نے سیکورٹی گارڈ کو پکڑ کر شہری کو بیوی بچوں سمیت راستہ دیکر بگڑتی صورتحال کو سنبھال لیا
تفصیلات کے مطابق ڈیرہ غازیخان جو وزیر اعلیٰ پنجاب کا آبائی شہر ہے جہان پر علاج معالجہ کیلئے آنے والے شہریوں کو مختلف قسم کی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے قبل ازیں ڈاکٹرز کی طرف سے مریضوں اور ان کے لواحقین کو تشدد کا نشانہ بنانا نا صرف معمول بنارکھا ہے بلکہ انہیں یرغمال بنا کر ان پر جوتوں اور مکوں کاآزادانہ استعمال اور موبائل فون بھی چھین لینا معمول ہے ایسا ہی واقعہ ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ غازیخان کے گیٹ پر سفید ریش بزرگ شہری موٹر سائیکل کے آگے اپنے دو بچوں جبکہ پیچھے بیوی اور شیر خوار بچے کو بٹھائے ہوئے پہنچے جہاں پر موجود سیکورٹی گارڈ نے اسے جانے سے روک دیا اور جانے کے اسرار پر گارڈ نے پہلے بکواس کر کے گالی دی تو جس پر بزرگ شہری نے اپنی بیوی اور بچوں کے سامنے گالیاں ملنے پر تعیش میں‌آ گیا اس موقع پر خاتون شیر خوار بچے سمیت موٹر سائیکل سے اتر کر سیکورٹی گارڈ کی منتیں ترلے کر تی رہی مگر بے رحم سیکورٹی گارڈ نے خاتون کی ایک نہ سنی الٹا ان کے سامنے بزرگ کو غلیظ گالیاں جاری رکھیں اور راہگیر شہری نے سیکورٹی گارڈ کو بزرگ کے ساتھ لڑتے دیکھ کر زبردستی پکڑ کر قابو کیا۔اور شہری کو راستہ دیکر مزید سیکورٹی گارڈ کے ہاتھوں سے انہیں اپنے بچوں اور بیوی کے سامنے غلیظ گالیاں سننے سے بچالیا ہے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here