وزیر اعظم عمران خان قوم سے خطاب کررہے ہیں۔ تصویر: فائل

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے پیر کے روز حزب اختلاف پر سخت ناراضگی کرتے ہوئے یہ دعویٰ کیا کہ سینیٹ انتخابات میں نہ صرف اسلام آباد کی نشست کے نتائج پر بلکہ ایوان بالا کی خیبر پختونخواہ کے انتخابات کے لئے نشستوں پر بھی پیسہ استعمال کیا گیا تھا۔

یہ بات وزیر اعظم نے تحریک انصاف کے اجلاس کے دوران کہی جہاں وزیر اعظم پارٹی کے ممبروں سے خطاب کر رہے تھے اور ان سے سینٹ انتخابات پر حکومت کے بیانیہ کو آگے بڑھانے پر زور دیا۔

پی ٹی آئی کے چیئرپرسن نے کہا کہ ان کی پارٹی کے سینیٹرز کو پہلے ہی آنے والے سینیٹ انتخابات کے لئے اپنے ووٹ بیچنے کی پیش کش مل رہی ہے۔

وزیر اعظم نے کہا ، “میں اچھی طرح جانتا ہوں کہ کس سینیٹر کو پیش کش کی گئی تھی۔”

وزیر اعظم نے الیکشن کمیشن آف پاکستان پر اپنی تنقید کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے کہا کہ حالیہ سینیٹ انتخابات میں اس کا کردار متنازعہ رہا ہے۔

وزیر اعظم عمران خان نے سینیٹ کے چیئرمین کے عہدے کے لئے پی ڈی ایم کے مشترکہ امیدوار ، سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کی شدید تنقید کی ، انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی کے رہنما نے “تباہی مچا دی” [the concept of] اخلاقیات [in politics] اور پوری قوم اس کے عمل کو دیکھ رہی ہے “۔

انہوں نے سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کو ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کے حیرت انگیز نقصان کا ذکر کرتے ہوئے کہا ، “حزب اختلاف نے اسلام آباد کی نشست جیتنے کے لئے پیسوں کا استعمال کیا۔”

وزیر اعظم نے پارٹی نمائندوں سے اپوزیشن کے مبینہ طور پر سینیٹ انتخابات میں ووٹ خریدنے کے معاملے کو اجاگر کرنے کی اپیل کی ، انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) ماضی میں بھی انتخابات پر اثرانداز ہونے کے لئے پیسہ استعمال کرتی رہی ہے۔

“یہ لوگ پہلے منتخب ہونے کے لئے رقم خرچ کرتے ہیں اور پھر یہی رقم خرچ کرتے ہیں [on illegal activities]، “وزیر اعظم عمران خان نے کہا۔

گیلانی نے اسلام آباد میں ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کے خلاف صدمہ جیت لیا

گذشتہ ہفتے سخت مقابلہ لڑنے والی انتخابی جنگ کے بعد سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی حکمران جماعت کے ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کے خلاف فاتح ہوئے۔

نتائج کے اعلان کے بعد ، عبدالحفیظ شیخ اور سابق وزیر اعظم نے مصافحہ کیا تھا اور ایک دوسرے کو گلے لگا لیا تھا۔ حفیظ کی شکست کی خبر انہیں زین قریشی نے بتائی ، جو وزیر کے پولنگ ایجنٹ تھے۔ جس کے بعد دونوں افراد نے ایک دوسرے کو گلے لگا لیا تھا۔

گیلانی نے 169 جبکہ شیخ نے 164 ووٹ حاصل کیے تھے۔ کل 341 ووٹوں میں سے 6 کو مسترد کردیا گیا اور 1 پولنگ نہیں کی گئی۔

گیلانی کا سینیٹ کی نشست کے لئے انتخاب کا سرٹیفکیٹ بھی ای سی پی نے جاری کیا۔



Source link

Leave a Reply