ایک صحت کارکن 18 مارچ 2021 کو ممبئی کے رہائشی علاقے میں کوویڈ 19 کورونا وائرس کی جانچ کے لئے ایک بچے سے ناک کا جھاڑو کا نمونہ جمع کرتا ہے۔ – اے ایف پی

ممبئی: ہندوستان کی سب سے دولت مند ریاست مہاراشٹرا اور اس کے دارالحکومت ممبئی میں وبائی امراض شروع ہونے کے بعد سے روزانہ کورونا وائرس کے سب سے زیادہ واقعات جمعہ کو ریکارڈ ہوئے جس سے ملک بھر میں ایک نئی لہر دوڑ گئی۔

اس مہینے میں 1.3 بلین افراد کی ایشین ملک برازیل سے آگے نکل گئی تھی کیونکہ یہ ملک دسمبر اور جنوری میں معاملات میں کمی کے بعد دوسرا سب سے زیادہ بیماریوں میں مبتلا تھا۔

لیکن حالیہ ہفتوں میں خاصا تیزی دیکھنے میں آئی ہے ، خاص طور پر مہاراشٹرا میں جس نے جمعہ کے روز ریکارڈ 25،833 نئے واقعات رپورٹ کیے جن میں مالی سرمایے اور میگاسی ممبئی میں 2،877 لاگ ان ہوئے۔

مجموعی طور پر ہندوستان میں تقریبا 40 40،000 نئے واقعات ریکارڈ ہوئے – جو ایک ہفتہ پہلے کی شرح سے دوگنا ہے – حالانکہ ستمبر میں کم و بیش 100،000 کے نصف چوٹی سے بھی کم ہے۔

مہاراشٹرا ، گجرات اور مدھیہ پردیش سمیت کئی بری طرح متاثرہ ریاستوں نے کچھ شہروں میں نقل و حرکت اور عوامی اجتماعات پر پابندی لگانے جیسے تازہ پابندیاں عائد کردی ہیں۔

تاہم ، پچھلے سال مہینوں سے لاک ڈاؤن کے دوران ملک بھر میں عائد بڑی پابندیوں کو زیادہ تر ختم کردیا گیا ہے ، جس میں بے پناہ مذہبی اور سیاسی اجتماعات ہو رہے ہیں۔

جمعرات کو گجرات کے وزیر اعلی وجے روپانی نے کہا ، “ریاست میں کوئی لاک ڈاؤن نہیں ہوگا۔”

وزیر اعظم نریندر مودی نے اس ہفتے کے شروع میں علاقائی رہنماؤں سے کہا تھا کہ وبائی امراض پر قابو پانے اور جانچ کو تیز کرنے کی کوششیں تیز کریں۔

مودی نے ورچوئل میٹنگ کو بتایا ، “ہمیں فوری اور فیصلہ کن اقدامات کے ذریعے وبائی امراض کی ابھرتی ہوئی دوسری چوٹی کو روکنا ہے۔”

“حالیہ ہفتوں میں ، تقریبا 70 70 اضلاع میں مقدمات کی تعداد میں 150 فیصد سے زیادہ کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور اگر ہم ابھی وبائی بیماری کو روک نہیں رہے تو اس سے ملک گیر وبا پھیل سکتا ہے۔”

ہندوستان نے اب تک تقریبا 40 40 ملین ویکسین لگوا رکھی ہیں ، جس کا مقصد جولائی کے آخر تک 300 ملین افراد کو ٹیکس لگانا ہے۔

مجموعی طور پر ملک میں 11.5 ملین سے زیادہ کیسز اور 160،000 اموات ریکارڈ کی گئیں۔



Source link

Leave a Reply