لڈن :ملک کو خوردنی تیل میں خود کفیل بنانے کے لئے امسال تحصیل وہاڑی میں سورج مکھی کی کاشت 2000 ایکڑ پر محیط ہو گی. اسسٹنٹ ڈائریکٹر محکمہ زراعت توسیع وہاڑی الطاف حسین

لڈن :ملک کو خوردنی تیل میں خود کفیل بنانے کے لئے امسال تحصیل وہاڑی میں سورج مکھی کی کاشت 2000 ایکڑ پر محیط ہو گی،ان خیالات کا اظہار اسسٹنٹ ڈائریکٹر محکمہ زراعت توسیع وہاڑی الطاف حسین نے زراعت آفیسر لڈن ارشاد علی شہباز و ساجد علی کاٹن انسپیکٹ کے ہمراہ لڈن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا پاکستان کی آبادی 20 کروڑ کے لگ بھگ ہے اور اس میں روزافزوں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے،آبادی کی خوراکی ضروریات سے نبرد آزما ہونے کیلئے خوردنی تیل کی پیداوار میں تیزی سے اضافے کی ضرورت ہے،جبکہ
بد قسمتی کی بات یہ ہے کہ ملک خوردنی تیل کی قلت سے دوچار ہے اور یہ قلت دن بدن بڑھتی جا رہی ہے کیونکہ آبادی میں اضافہ اور غذا میں روغنیات کے بڑھتے ہوئے استعمال کی وجہ سے پیداوار طلب کا ساتھ نہیں دے پا رہی،جس پر کسانوں کو تیل دار اجناس کو کاشت کرنا چاہیے،انہوں نے مزید کہا کہ بہاریہ سورج مُکھی کا شمار اہم خوردنی تیلدار اجناس میں ہوتا ہے۔
اس فصل کا دورانیہ تقریباََ 100سے 110دن ہوتا ہے اور کم مدت کی فصل ہونے کی وجہ سے اسے بڑی فصلوں کے درمیانی عرصہ میں باآسانی کاشت کیا جاسکتا ہے۔بھاری میرا زمین سورج مکھی کی کاشت کے لئے بہت موزوں ہے۔سیم زدہ اور بہت ریتلی زمین اس کے لئے موزوں نہیں ہے۔ زمین کی تیاری کے لئے راجہ ہل یا ڈسک ہل پوری گہرا ئی تک چلائیں تاکہ پودوں کی جڑیں گہرائی تک جا سکیں۔کھیت کا ہموار ہونا بھی ضروری ہے۔ سورج مکھی کی زیادہ پیداوار حاصل کرنے کے لئے صحیح وقت پر اس کی کاشت انتہائی ضروری ہے۔تاخیرسے کاشت کرنے کی صورت میں نہ صرف اِس کی پیداوار میں کمی آ جاتی ہے بلکہ اِس سے تیل بھی کم حاصل ہوتا ہے،اس موقع پر پیسٹی سائیڈ ایسوسی ایشن لڈن کے صدر مختار احمد سیال،محمد مرزا لک،محمد افضل مختار ودیگر موجود تھے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here