سول ہسپتال سانگھڑ ڈاکٹرز اور ادویات کی کمی کے ساتھ ڈسپنسرز بھی ڈیوٹی سے غائب

سول ہسپتال سانگھڑ
ڈاکٹرز اور ادویات کی کمی تو پہلے ہی تھی سونے پہ سہاگہ ڈسپینسرز بھی ناپید ہوگئے۔
بیک وقت 50 مریضوں کو اٹینڈ کرنے کیلیے صرف دو ڈسپینسرز ۔
مریضوں کو اٹینڈ کرنے کیلیے جن یو ٹی سیز کی ڈیوٹی لگائی جاتی ہے وہ اکثر غائب رہتے ہیں کیونکہ انھیں یا تو کلرکوں کا آشیرباد حاصل ہوتا ہے یا پھر اپنے سیاسی اثر ر رسوخ کی بناء پر ڈیوٹی نہیں کرتے۔
آج بھی ایمرجنسی میں جب مریضوں کی تعداد بڑھی تو ڈیوٹی ڈاکٹر کو ڈسپینسرز کی مدد کیلیے خود بھی کام کرنا پڑا۔
کس کو فریاد کریں؟
سول سرجن کو شکایت کریں تو وہ صرف جھاڑ ہی سکتے ہیں اسٹاف کو کیونکہ سیاسی ناخداؤں کے سامنے وہ بھی بے بس ہیں۔
ڈی ایچ او کو کہیں تو ان کے پاس سب اچھا ہے کی رپورٹ کے سوا اور کچھ نہیں ملتا۔
ڈی سی کو کہیں تو وہ کہتے ہیں کے ہم کوشش کر رہے ہیں۔
ایم پی اے کو کہاں جا کر کہیں صاحب جی کہیں ملتے ہی نہیں۔
ایم این اے کو کہیں تو ایک ہی جواب آتا ہے کے یہ سب مسئلے ابھی تک پائپ لائن میں ہیں جلد حل ہو جائیں گے۔
شہری ایکشن کمیٹی اور امن کمیٹی بھی ناجانے کہاں سوئی ہوئی ہے۔
آخر ہم سانگھڑ کے لوگ جائیں تو جائیں کہاں.M.shabir.kk

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here