تحصیل ہیڈ کوا رٹر ہسپتال بوریوالہ میں ڈاکٹر ز اور عملہ کی غفلت نے معصوم بچے کی جان لے لی

تحصیل ہیڈ کوا رٹر ہسپتال بوریوالہ میں ڈاکٹر ز اور عملہ کی غفلت نے معصوم بچے کی جان لے لی ۔ بر وقت طبی امداد نہ ملنے پر معصوم بچے نے سسکیاں لے لے کر باپ کی گو د میں جان دے دی۔ ماں غم سے نڈھال ۔

محمد عمران سکنہ فضل آ باد اپنے ہاں بچے کی ولا دت کے بعد اسے چیک کر وانے کی غر ض سے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال لے آ یا جہاں پر ڈاکٹروں نے غیر ذمہ دارانہ انداز سے پیش آ تے ہوئے محمد عمران کے نو مولود بچے کو داخل کر لیا لیکن روایتی طور پر بر وقت اور منا سب طبی امداد نہ ملنے کے سبب معصوم بچے کی حالت غیر ہو نے لگی جس پر محمد عمران نے وارڈ میں تعنیات سٹاف کو بچے کی حالت سے آ گاہ کیا توعملہ نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کر تے ہوئے بچے کو چیک کر نے سے ہی انکار کر دیا جس پر محمد عمران بچے کو وارڈسے اٹھا کر ڈاکٹر کے پاس لے کر گیا تو ڈاکٹر ز نے اسے ملتان سے علاج کر وانے کا مشورہ دے دیا اسی دوران بر وقت علاج نہ ہو نے کے سبب محمد عمران کا نو مولود بیٹا اپنے با پ کی گود میں سسکیاں لے لے کر دم توڑ گیا جس پر معصوم بچے کی ماں غم سے نڈھال ہو گئی اور ڈاکٹروں اور سٹاف کی مبینہ غفلت کے با عث محمد عمران کے خو شیوں بھرے گھر میں صف ماتم بچھ گئی معصوم بچے کے والد اور دیگر اہل خانہ نے وزیر اعلی پنجاب ، ڈپٹی کمشنر وہا ڑی سمیت دیگر اعلی حکام سے نو ٹس لیتے ہو ئے کا روائی کا مطالبہ کیا ہے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here