بورے والا سول سوسائٹی بورے والا کا نمائندہ اجلاس،شہر میں تجاوزات کی بھرمار

    • بورے والا

    • سول سوسائٹی بورے والا کا نمائندہ اجلاس،شہر میں تجاوزات کی بھرمار،صفائی کی ابتر صورتحال،پینے کے صاف پانی کی عدم فراہمی،ٹریفک کے مسائل میں اضافہ پر شدید احتجاج

    • متعلقہ اداروں کی کارکردگی پر افسوس کا اظہار،عوامی مسائل کی نشاندہی اور اسکے حل میں ہر ممکن جدوجہد کرنے کا عزم

    • تفصیل کے مطابق

    • بورے والا کی سول سوسائٹی کے متحرک نمائندہ افراد اور سٹیک ہولڈرز کا اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں سید سجاد حسین بخاری،عبدالرؤف چوہدری،سہیل صابر چوہدری،میاں محمد اشرف،عبدالمجیب پوسوال ، اصغر علی جا وید ، ندیم مشتاق رامے ،محمد شیر خاں کھچی،چوہدری اکرام الحق ثاقب،مسعود عابد، چوہدری احتشام داؤد،محمد لطیف خلجی،عدیل مختار،شہزاد مصطفےٰ چوہان،سید زاہد حسین مشہدی،حافظ جنید احمد،ساجد اکرم بھٹی سمیت تمام نمائندہ شخصیات نے شرکت کی اجلاس میں گول چوک اور کالج روڈ کے علاوہ اندورن شہر اور قومی شاہراہوں کے گرد بدترین تجاوزات پر شدید غم و غصہ کا اظہار کیا گیا کالج روڈ پر تجاوزات مافیا کی وجہ سے نئے لگائے جانے والے پودوں کو پہنچنے والے نقصان پر بلدیہ کے ارباب اختیار کی خاموشی پر بھی افسوس کا اظہار کیا گیا جبکہ شہر اور اضافی بستیوں میں صفائی کی ابتر صورتحال کو بلدیہ کے عملہ سنیٹری کی مجرمانہ غفلت قرار دیا گیا ارکان سول سوسائٹی نے کہا کہ مسائل کی نشاندہی اور قابل عمل تجاویز دینا سول سوسائٹی کا کام ہے جبکہ ان مسائل کا حل متعلقہ اداروں کی ذمہ داری ہے جو کہ وہ پوری نہیں کر رہے ٹریفک جام رہنا آئے روز ٹریفک کے حادثات اور لاہور،ملتان روڈ کے درمیان بنائے گئے بلاجواز ڈیوائڈرز نہ صرف کئی قیمتی انسانی جانوں کو نگل چکے ہیں بلکہ اْنکی وجہ سے ٹریفک کے مسائل میں اضافہ ہو رہا ہے ٹریفک پولیس کا عملہ اپنی ذمہ داری پوری کرنے کی بجائے لوٹ مار میں مصروف رہتا ہے شہر میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے لگائے گئے متعدد ٹیوب ویل تاحال بند پڑے ہیں اور سرکاری فلٹریشن پلانٹس کے فلٹر تبدیل نہیں کیے جاتے ماڈل بازار کی منظوری ہونے کے باوجود اس منصوبے پر کام کا آغاز نہیں ہو سکا حکومت اور منتخب ارکان اسمبلی اس ماڈل بازار منصوبے کو جلد شروع کروائیں اجلاس میں طے پایا کہ ان مسائل کے حل کیلئے بہت جلد ڈپٹی کمشنر وہاڑی سے وفد کی صورت میں ملاقات کر کے آگاہ کیا جائے گا اور ان مسائل کے حل تک یہ جدوجہد جاری رہے گی۔

    رپوٹ : فدا حسین

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here