بورے والا………

بازاروں میں گراں فروشی اور ناپ تول میں ہیرا پھیری عروج پر،بورے والا انتظامیہ کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔۔۔۔۔۔۔

اندرون شہر کے بازاروں میں میں پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی عدم دلچسپی کی وجہ سے ناپ تول میں کمی اور ناقص اشیاء کی فروخت معمول بن چکی ہیں،۔۔۔۔۔۔۔

عوام کمر توڑ مہنگائی میں معیاری اور سستی اشیاء خریدنے کی بجائے درجہ دوئم اور درجہ سوئم کی اشیاء درجہ اول کے نرخوں پر خریدنے پر مجبور ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔

شہریوں کا کہنا ہیں کہ وزیر اعظم عمران خان مہنگائی مافیا کے خلاف کارروائیاں کرنے کے بلند و بانگ دعوے تو کرتے تھے۔۔۔۔۔۔

لیکن عملی طور پر حکومت میں آنے کے بعد وزیراعظم نے گراں فروشوں کے خلاف سخت اقدامات اٹھانے کی بجائے غریب سفید پوش طبقے کو گراں فروشوں کے رحم وکرم پر چھوڑ دیا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔،

جس کیوجہ سے گرانفروشی کے مرتکب افراد نے ریاست کے اندر الگ ریاست قائم کر رکھی ہے

لوٹ مار کا بازار گرم ہے قانون نافذ کرنے والے ادارے گراں فروشی کے مرتکب دکانداروں کے خلاف کارروائیاں کرنے کی بجائے ڈنگ ٹپاؤ پالیسیوں پر گامزن ہیں
جس کیوجہ سے غریب سفید پوش طبقہ زندہ درگور ہو چکا ہے

وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب، کمشنر ملتان، ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے اور گران فروشوں کے خلاف فوجداری مقدمات درج کروانے کا مطالبہ کیاہے……

رپورٹ
ملک طالب حسین

Leave a Reply